Jump to content
sunrise

Sad Poetry - اداس شاعری

Recommended Posts

ہم وہ سیاہ نصیب ہیں طارق کہ شہر میں
کھولیں دکان کفن کی تو لوگ مرنا چھوڑ دیں

Share this post


Link to post
Share on other sites
Posted (edited)

اداس راتوں میں تیز کافی کی تلخیوں میں

وہ کچھ زیادہ ہی یاد آتا ہے سردیوں میں

مجھے اجازت نہیں ہے اس کو پکارنے کی

جو گونجتا ہے لہو میں سینے کی دھڑکنوں میں

وہ بچپنا جو اداس راہوں میں کھو گیا تھا

میں ڈھونڈتا ہوں اسے تمہاری شرارتوں میں

اسے دلاسے تو دے رہا ہوں مگر یہ سچ ہے

کہیں کوئی خوف بڑھ رہا ہے تسلیوں میں

تم اپنی پوروں سے جانے کیا لکھ گئے تھے جاناں

چراغ روشن ہیں اب بھی میری ہتھیلیوں میں

جو تو نہیں ہے تو یہ مکمل نہ ہو سکیں گی

تری یہی اہمیت ہے میری کہانیوں میں

مجھے یقیں ہے وہ تھام لے گا بھرم رکھے گا

یہ مان ہے تو دیے جلائے ہیں آندھیوں میں

ہر ایک موسم میں روشنی سی بکھیرتے ہیں

تمہارے غم کے چراغ میری اداسیوں میں

Edited by sunrise

Share this post


Link to post
Share on other sites
Posted (edited)

سوچتا ہوں کہ اسے نیند بھی آتی ہوگی

وصی شاہ

 

سوچتا ہوں کہ اسے نیند بھی آتی ہوگی

یا مری طرح فقط اشک بہاتی ہوگی

وہ مری شکل مرا نام بھلانے والی

اپنی تصویر سے کیا آنکھ ملاتی ہوگی

اس زمیں پر بھی ہے سیلاب مرے اشکوں سے

میرے ماتم کی صدا عرش ہلاتی ہوگی

شام ہوتے ہی وہ چوکھٹ پہ جلا کر شمعیں

اپنی پلکوں پہ کئی خواب سلاتی ہوگی

اس نے سلوا بھی لیے ہوں گے سیہ رنگ لباس

اب محرم کی طرح عید مناتی ہوگی

میرے تاریک زمانوں سے نکلنے والی

روشنی تجھ کو مری یاد دلاتی ہوگی

روپ دے کر مجھے اس میں کسی شہزادے کا

اپنے بچوں کو کہانی وہ سناتی ہوگی

Edited by sunrise

Share this post


Link to post
Share on other sites

Join the conversation

You can post now and register later. If you have an account, sign in now to post with your account.

Guest
Reply to this topic...

×   Pasted as rich text.   Paste as plain text instead

  Only 75 emoji are allowed.

×   Your link has been automatically embedded.   Display as a link instead

×   Your previous content has been restored.   Clear editor

×   You cannot paste images directly. Upload or insert images from URL.


×
×
  • Create New...